بہتر ہے بد کہے دل ذباں سے

بہتر ہے بد کہے دل ذباں سے

دلِ بےذوق، شیریں کلمہ سے

۔

لحاظ ہے عمر اور سردار سے

عزت ہے صرف دلِ ساماں سے

۔

خاموش ہے وہ تو ھم بھی سہی

دھاگے ہیں ٹوٹے اسی گماں سے

۔

سہے کنکر ننہی سی جاں نے

اجڑا نہ دل پھر کسی طوفاں سے

۔

وجہ  ہر  پنہ  آنسو ،  ہنسی  کا

سیکھ مہریں کچھ اس داستاں سے


(عبیرہ بیاجی مہرین)

Advertisements

One Reply to “بہتر ہے بد کہے دل ذباں سے”

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s